وزیراعظم کا ساہیوال کے لئے ساڑھے 7 لاکھ ہیلتھ انشورنس کا اعلان

ساہیوال: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ لوگ گھر بنانے کے لیے زمین خریدتے ہیں لیکن اس پر قبضہ ہوجاتا ہے۔ میں نے لاہور کے سب سے بڑے قبضہ گروپ کا محل گرتے دیکھا ہے۔ بڑے بڑے ڈاکوؤں پر ہاتھ پڑا ہے، یہ ہے تبدیلی

ساہیوال میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کو خاص مبارکباد دینا چاہتاہوں۔ جس طرح قبضہ گروپ کے خلاف آپ کام کررہے ہیں وہ قابل تعریف ہے۔ آپ لوگوں نے قبضہ گروپوں کے محل گرائے ہیں، آپ کو مبارک دیتا ہوں۔

عمران خان نے کہا کہ قبضہ گروپوں کی پشت پناہی سابق وزیراعظم اور ان کا خاندان کرتا رہا۔ بڑے بڑے ڈاکووَں پر ہاتھ پڑا ہے ، یہ ہے تبدیلی۔ مدینہ کی ریاست میں انصاف قائم تھا۔ دنیا میں جو ملک بھی آگے بڑھا ہے وہاں قانون کی بالادستی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے ساہیوال کے تمام شہریوں کو ہیلتھ انشورنس ملے گی۔ ہم نے پہلے صحت اور پھر تعلیم پرتوجہ دینا ہوگی۔ ہماری پوری کوشش ہوگی یکساں نظام تعلیم ملک میں رائج ہو۔ سرکاری اسکولوں اور نجی تعلیمی اداروں کے سلیبس میں فرق ہے۔ تعلیم کے نظام میں اس خاص فرق کو ختم کرنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جلد پنجاب کے سارے لوگوں کے پاس صحت کارڈ ہوگا۔ ساہیوال میں ساڑھے 7 لاکھ لوگوں کو ہیلتھ انشورنس ملے گی۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ احساس پروگرام کے ذریعے 180 ارب روپے بانٹے گئے۔ سندھ میں آبادی سے زائد مالی امداد تقسیم ہوئی لیکن نظام شفاف نہیں تھا۔
ایک نیا لوکل گورنمنٹ نظام لے کر آرہے ہیں۔ وسائل کی تقسیم ہی ہمارا بنیادی مقصد ہے

وزیراعظم نے کہا ہے کہ سینیٹ انتخابات کیلئے ابھی سے ریٹ لگنا شروع ہو چکے، معلوم ہے کونسا سیاسی لیڈر پیسے لگا رہا ہے، کرپشن کو روکنے کی ترامیم کے مخالف قوم کے سامنے بے نقاب ہوں گے۔ یہ کیسے ممکن ہے پیسہ لگا کر سینیٹر بننے والا پیسہ نہیں بنائے گا، سینیٹ انتخابات میں اوپن بیلٹنگ کیلئے آئینی ترمیم کر رہے ہیں۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ سیاسی پشت پناہی کے بغیر سرکاری زمینوں پر قبضہ نہیں ہو سکتا، مریم نواز نے قبضہ مافیا سے اظہار یکجہتی کیا، کھوکھر برادران نے 130 کروڑ کی سرکاری زمین پر قبضہ کیا، خود کو مستقبل کا لیڈر کہنے والی مریم نواز قبضہ مافیا کی حمایت کر رہی ہیں، ان کے دور میں ہر رہنما نے سرکاری زمینوں پر قبضے کیے،

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*