وزیراعظم اپنی حکومت ٹیوٹر پرچلا رہا-بتائے 1 کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھروں کا کیابنا؟۔سراج الحق

چیچہ وطنی: امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کسووال میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا عوام غربت, بےروزگاری, بدآمنی اور منہگائی سے پریشان ہے, لاہور سے دو لڑکیاں ایک ماہ قبل اغواء ہوئی اور آج ان کی لاش گندے نالے سے برآمد ہوئی…کوئٹہ میں کئی دنوں سے سات لاشیں سڑک پر رکھ کر دھرنا دئیے ہوئے ہیں انہوں نے لاشوں کو نہیں دفنایا…انکا مطالبہ ہے قاتل کون ہے انکو گرفتار کیا جائے. وزیراعظم آئے اور ہمیں تسلی دے… وزیر اعظم کا تکبر دیکھے اپنی حکومت ٹیوٹر پر چلا رہا- عوام کا مطالبہ ہے وزیراعظم ان کے پاس جائے…
ملک میں ظلم کا نظام ہے وزیراعظم ہاوس کے قریب اسامہ کو گولیاں مار کر قتل کر دیا گیا….
اسی جماعت کے وزراء اور وزیراعظم کہتا تھا جس کے قتل کا ملزم نہ ملے اسکا قاتل حکومت وقت ہوتا… موجودہ حکومت نے آسیہ بی بی کو بیرون ملک جانے دیا…

قوم کے ٹیکس سے خریدے گئے ہتھیار اور گولیاں دشمنوں کے لئے ہوتی ہیں بدقستمی سے یہ گولیاں ہمارے ہی بچوں پر برسائی جا رہی ہیں۔ حکومت بتائے ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھروں کا کیا بنا؟۔ 6 ماہ کے دوران جتنا قرض اس حکومت نے لیا کسی دوسری حکومت نے نہیں لیا۔ حکومت نے ایک مرتبہ پھر قوم کو آئی ایم ایف کا غلام بنایا۔ ظالم کا ساتھ دینا ظلم کرنے کے مترادف ہے ۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ اگر آرٹیکل 62,63 پر عمل ہو جائے تو جماعت اسلامی کے سوا سب لیڈر جیل جائینگے۔ اگر ہم چاہتے ہیں کہ غریب آدمی کو بھی ریلیف ملے تو اسکے لئے اسلامی نظام کا نفاذ ضروری ہے ۔ حکومت نے 48 گھنٹوں میں بھارتی پائلٹ کو رہا کر کے بزدلی کا مظاہرہ کیا۔ آپ بتائے مسلم لیگ ن پیپلز پارٹی پی ٹی آئی اور جرنیلوں نے پاکستان کے نظریہ سے غداری نہیں کی۔ ان سب نے نظریہ پاکستان سے بے وفائی اور غداری کی ۔ میں کئی مرتبہ منسٹر رہا لیکن آج تک کرپشن کا الزام نہیں لگا۔ سپریم کورٹ کا کہنا تھا کہ اگر آرٹیکل 62 63 کے نفاظ کی بات کی جائے تو اس پر جماعت اسلامی کے علاوہ کوئی پورہ نہیں اترتا۔

بابر مشتاق,ملک امیر اختر اعوان, میجر غلام سرور,فیض میراں,خان حق نواز درانی, رحمت اللہ وٹو,خالد مشتاق ایڈوکیٹ,چوہدری عثمان حیدر,طعیب محمود بلوچ,محمد سلمان اسٹیج پر موجود تھے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*