چیچہ وطنی: تین خانہ بدوش کمسن نابالغ لڑکیوں سے اجتماعی زیادتی کیس۔ ایک ملزم جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل

چیچہ وطنی: تین خانہ بدوش کمسن نابالغ لڑکیوں سے اجتماعی زیادتی کرنے والے چار ملزمان میں سے نوید نامی ایک ملزم کو پولیس تھانہ سٹی نے ابتدائی تفتیش کے بعد جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔

پولیس تھانہ سٹی واقعہ میں ملوث دیگر تین ملزمان کو پکڑنے میں ناکام رہی جبکہ پولیس تھانہ سٹی نے گرفتار ملزم نوید سے خنجر اور پستول کی ریکوری کے بغیر ہی اسے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دینے سے متاثرہ لڑکیوں کے ورثاءمیں شدید تشویش پائی جا رہی ہے۔

متاثرہ لڑکیوں نے پریس کلب میں انصاف کے لیے دہائی دیتے ہوئے میڈیا کی وساطت سے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے واقعہ کا نوٹس لینے کی اپیل کرتے ہوئے دیگر مفرور ملزمان کی فوری گرفتاری کی اپیل کی ہے۔

گزشتہ روز تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں گینگ ریپ کا شکار ہونے والی تین کمسن بچیوں کی میڈیکل رپورٹ پولیس تھانہ سٹی کو موصول ہو گئی ہے جس میں لیڈی ڈاکٹر نے ابتدائی میڈیکل رپورٹ میں بچیوں سے زیادتی کی تصدیق کی ہے۔ تاہم بچیوں اور ملزمان کے ڈی این اے ٹیسٹ کے بعد ہی فائنل رپورٹ جاری کی جائے گی۔

دوسری جانب شہر کی سماجی تنظیموں نے اوباش نوجوانوں کے ہاتھوں کمسن نابالغ خانہ بدوش لڑکیوں کی اجتماعی آبروریزی کی بھر پور مذمت کرتے ہوئے آر پی او ساہیوال اور ڈی پی او ساہیوال سے مطالبہ کیا ہے کہ خانہ بدوش بچیاں بھی انسان ہیں اور وہ بھی اپنے والدین کی عزت ہیں۔ اس لیے اعلیٰ حکام مفرور ملزمان کی فوری گرفتاری عمل میں لائیں اور بچیوں کو تحفظ اور انصاف فراہم کیا جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*